عقیدہ ختم نبوت ہمارے ایمان کی جان و لازمی جزو ہے جس کا دفاع ہر مسلمان پر لازم ہے۔علماءکرام کے خطابات

عقیدہ ختم نبوت ہمارے ایمان کی جان و لازمی جزو ہے جس کا دفاع ہر مسلمان پر لازم ہے۔علماءکرام کے خطابات

تلہ گنگ(نما ئندہ بول تلہ گنگ) پاکستان اسلام کے نام پر حاصل کیا گیا جس کا مقدر اسلامی نظام ہی ہے‘عقیدہ ختم نبوت ہمارے ایمان کی جان و لازمی جزو ہے جس کا دفاع ہر مسلمان پر لازم ہے۔ہم اپنی جانیں قربان کردیں گے مگر ملک کو لبرل سٹیٹ نہیں بننے دیں گے ان خیالات کاا ظہار عالمی مجلس تحفظ ختم نبوت لاوہ کے زیراہتمام مولانا خواجہ خلیل احمد کے زیرصدارت تیسری سالانہ تحفظ ختم نبوت کا نفرنس سے شاہین ختم نبوت مولانا اللہ وسایا ،مولانا عبدالواحد قریشی،مولانا عبیدالرحمن انور ،مفتی اسد محموداور دیگر مقررین نے خطاب کرتے ہوئے کیا ،اس موقع پر جے یو آئی (ف) میانوالی کے امیر مفتی امان اللہ،جے یو آئی (ف) ضلع چکوال کے قاری زبیراحمد ،قاری نورمحمد،مولانا نورمحمد آصف ٹمن،مفتی آصف محمد،مفتی تنویر احمد ،مولانا محمد شریف،مولانا عبدالرو¿ف،مولانا علی خان،قاری محمد عمرعثمانی ،مفتی شاہد عقیل،قاری عبدالقدوس،مولانا حنیف صابر مولانا خالد فاروق جرار،مولانا عبدالرحمن ،ملک خالد مسعود،چوہدری عبدالجبار،ملک طارق ایڈووکیٹ،ملک امتیاز پچنند،مولانا محمد شریف سمیت بڑی تعداد میں عوام الناس نے شرکت کی ،مقررین نے کہا کہ کہ عقیدہ ختم نبوت کے سب سے پہلے محافظ حضور پرنور کے لاڈلے صحابی ،خلیفہ اول حضرت سیدنا صدیق اکبرؓہیں جنہوں نے آپﷺ کی ناموس پر اپنا تن ،من ،دھن سب کچھ قربان کردیا۔آئین میں کسی بھی قسم کی ترمیم کو برداشت نہیں کیا جائے گا قادیانیت کے خلاف کام اللہ پاک کی رضامندی اور نبی کریم صلی اللہ علیہ وسلم کی توجہات کو اپنی طرف متوجہ کرنے کا بہترین وسیلہ ہے۔خوش بخت و سعادت مند انسانوں کو قدرت ان کاموں کے لئے قبول فرماتی ہے۔اگر روز محشر حضورصلی اللہ علیہ وسلم کی شفاعت حاصل کرنا چاہتے ہیں توتحفظ ختم نبوت کے اعلی ترین کام میں شریک ہوںختم نبوت کانفرنسوں کا انعقاد، قادیانی فتنہ کے دجل و فریب اور ان کے کفر یہ عقائد و نظریات کو بے نقاب کرنے ،عقیدہ ختم نبوت کے تحفظ ، نسلِ نو کی ایمان کی حفاظت کا ذریعہ اور اتحاد امت کا عملی مظاہرہ ہے۔