حکومت چار اضلا ع میں جو مائیں مزدوری کی وجہ سے بچوں کو دودھ پلانے سے قاصر ہیں ان کیلئے وظیفہ مقرر کر رہی ہے۔صوبائی وزیر محمد ہاشم ڈوگر

حکومت چار اضلا ع میں جو مائیں مزدوری کی وجہ سے بچوں کو دودھ پلانے سے قاصر ہیں ان کیلئے وظیفہ مقرر کر رہی ہے۔صوبائی وزیر محمد ہاشم ڈوگر

چکوال(شفیق ملک سے)ڈسٹرکٹ پاپولیشن ویلفیئر ڈیپارٹمنٹ کے زیر اہتمام بدھ کے روز ضلع کونسل ہال میں ایک سیمینار کا انعقاد کیا گےا جس میں صوبائی وزیر بہبود آبادی پنجاب کرنل (ر) محمد ہاشم ڈوگر نے بطور مہمان خصوصی شرکت کی جبکہ ضلعی انتظامیہ کی طرف سے ایڈیشنل ڈپٹی کمشنرریونےو چکوال محمد آصف رضا ،سی ای او ہیلتھ ڈاکٹر مختار اعوان ،وائس چیئر مین ضلع کونسل چودھری خورشید بیگ،ڈی او پاپولیشن ویلفیئر ملک وجاہت علی ،صدر الوجود شفیق ملک ،صدر ڈسٹرکٹ بار راجہ عبدالجلیل،ضلعی افسران،علمائے کرام ،سول سوسائٹی،طلبا ءاور این جی اوز کے نمائندگان کی ایک بڑی تعداد نے شرکت کی ۔صوبائی وزیر بہبود آبادی ہاشم ڈوگر نے سیمینار سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ پاکستان کی آبادی میں فکر انگیز اضافہ ہورہا ہے ۔موجودہ حکومت نے پہلی بار اس سنگین مسئلے کے حل کے لیے عملی اقدامات کرنے کی اہمےت پر زور دیتے ہوئے پنجاب کے تمام اضلاع میں آگہی پروگرامز شروع کیے ہیں ۔آج کا سیمینار بھی اس سلسلے کی ایک کڑی ہے ۔ہمیں اسلامی تعلیمات پر عمل کرتے ہوئے ماں اور بچے کی صحت ،تعلیم و تربےت کو بہتر بنانے اور بچے کے حقوق بہم پہنچانے کے لیئے ماﺅں کو دو سال تک اپنا دودھ پلانا چاہیے۔حکومت نے چار اضلا ع میںجو مائیں مزدوری کی وجہ سے اپنے بچوں کو دودھ پلانے سے قاصر ہیں کے لیئے ایک وظیفہ مقرر کر رہی ہے تاکہ مائیں اپنے شیرخوار کو دودھ پلا کر انہیں مکمل غذا اور انکا بنےادی حق دے سکیں۔انہوں نے پاپولیشن افسران کو ہداےت کرتے ہوئے کہا کہ وہ ہفتہ وار کی بنےاد پر لڑکے اور لڑکےوں کے سکولوں میں جا کر آگاہی پروگرام منعقد کریں اور ضلعی سطح پر علمائے اکرام کنونشن کا بھی اہتمام کریں۔آخر میں اے ڈی سی آر اور صوبائی وزیر بہبود آبادی کو شیلڈز پیش کی گیئں۔