تلہ گنگ مختلف محلوں میں گیس پر یشر مدھم ،بچے ،کاروباری اور سرکاری اہلکار ناشتے کے بغیر دفتر جانے پر مجبور ،شہریوں کی حال دہائی

تلہ گنگ مختلف محلوں میں گیس پر یشر مدھم ،بچے ،کاروباری اور سرکاری اہلکار ناشتے کے بغیر دفتر جانے پر مجبور ،شہریوں کی حال دہائی

تلہ گنگ (نما ئندہ بول تلہ گنگ ) تلہ گنگ گیس پریشر مدھم ،بچے سکول،کاروباری اور سرکاری اہلکار ناشتے کے بغیردفتر جانے پر مجبور ،گیس پریشر ٹھیک ہے وال کو بند کروا کر پریشر مدھم کروایا جا تا ہے ،شہریوں کی سوشل میڈیا پر بحث ۔تلہ گنگ کے مختلف محلوں میں گیس کا پریشر نہ ہو نے کے برابر ہے اور چولہے ٹھنڈے پڑ گئے ہیں ،بچے ،کاورباری اور سرکاری دفاتر میں کام کرنے والے اہلکار ناشتے کے بغیرجانے پر مجبور ہیں اور شہریوں نے بتایا ہے کہ گیس کنکشن ہونے کے باوجود ہمیں پھرایل پی جی استعمال کرنی پڑتی ہے اور کئی بار متعلقہ حکام کی گیس مدھم پریشر پر توجہ دلوائی لیکن کسی نے کوئی توجہ نہیں دی ۔محمد عمران رسول ،اشفاق بڈھیال ،گوہر اعوان ودیگر نے واٹس اپ گروپ میں گفتگو کر تے ہو ئے اظہار کیا کہ گیس پریشر ٹھیک ہے لیکن اسکو کم کرنے کیلئے باقاعدہ منصوبہ بندی کے تحت گیس وال سے پر یشرکم کر کے من پسند افراد کا گیس پریشر بڑھا یاجا تا ہے اور احتجاج کرنے کے بعد مقامی کھڑپینج سوئی گیس عملہ کےساتھ جا کرفوٹو سیشن کے بعد وال کو کھلوا دیتے ہیں جسکے بعد گیس پریشر چند دنوں کیلئے بحال ہو جا تا ہے اور پھر اسی طرح گیس پریشر مدھم پڑ جاتا ہے ۔معززین شہریوں نے سوئی گیس حکام کو واضح پیغام دیا ہے کہ تلہ گنگ کے شہریوں کیساتھ ایسا مذاق بند کیا جا ئے اگر اسی طرح حالات رہے تو بھرپور احتجاج کیا جا ئے گا جسکی تمام تر ذمہ داری سوئی گیس حکام اور انکی سرپرستی کرنے والوں پرعائد ہو گی ۔