حکمرانوں کے دعوے ٹھس ،بجلی کی بلوں نے صارفین کے ہوش ٹھکانے لگا دئیے ،شہریو ں کی گڑ گڑا کر ریلیف کی اپیل۔

حکمرانوں کے دعوے ٹھس ،بجلی کی بلوں نے صارفین کے ہوش ٹھکانے لگا دئیے ،شہریو ں کی گڑ گڑا کر ریلیف کی اپیل۔

تلہ گنگ (نما ئندہ بول تلہ گنگ) نئی حکومت اور نئے ہی حکم نامے ،بجلی کے بلوں سمیت روز مرہ اشیاءکی قیمتوں میں اضافہ نے شہریوں کی چیخیں نکال دیں ،شہریوں نے حکمرانوں سے ریلیف کی گڑ گڑا کر اپیل کی ۔الیکشن کمپین کے دوران نئی حکومت کی جانب سے دعوے کیے جاتے رہے کہ ہم اقتدار سنبھالتے ہی عوام کو حقیقی ریلیف دیں گے اور ن لیگ والوں نے غیر ضروری ٹیکسوں کی بھرمار کر کے عوام کو مہنگائی میں دھکیل رکھا ہے اور ہم اقتدار کی کمان لیتے ہی غیر ضروری ٹیکسوں کا خاتمہ کر کے ریلیف دیں گے ۔نئی کابینہ قائم ہو تے ہی عوام پر مہنگائی کے بم گرانے شروع کر دئیے ہیں اور ارشد نامی نوجوان نے بتایا ہے کہ پہلے میرابجلی کا بل 7ہزار کے لگ بھگ آ تا تھا اور اس ماہ میں35ہزار سے بھی تجاوز کر گیا ہے اب بتائیں ہم جائیں تو کہاں جائیںاسی طرح بازار میں سبزیاں سمیت دیگر خورد نوش اشیاءمیں بے پناہ اضافہ کر دیا ہے جو عام آ دمی کے بس میں اشیاءکی قوت خرید سے تجاوز کر چکی ہیں ۔شہریوں نے حکمرانوں سے پر زور رحم کی اپیل کی ہے کہ خدارا ہمیں مہنگائی کے ڈرون حملوں سے نجات دلوائی جائے اور نت نئے تجزبات کر کے ہماری کمر کو نہ توڑا جا ئے ۔