اندھیر نگری چوپٹ راج ،لاوہ سرکاری بلڈنگز کی دیواریں زمین بوس کئی عمارتیں جانوروں کے باڑوں میں تبدیل،ڈپٹی کمشنر نوٹس لیں۔

اندھیر نگری چوپٹ راج ،لاوہ سرکاری بلڈنگز کی دیواریں زمین بوس کئی عمارتیں جانوروں کے باڑوں میں تبدیل،ڈپٹی کمشنر نوٹس لیں۔

تلہ گنگ (امتیاز لاوہ اور بلال صا بر سے ) اندھیر نگری چوپٹ راج ،لاوہ میں سرکاری بلڈنگز کی دیواریں زمین بوس اور کئی عمارتیں جانوروں کے باڑوں میں تبدیل ،اینٹیں ،دروازے اور نلکا کا سامان غائب ،متعلقہ حکام ٹس سے مس نہیں ،سرکاری خزانے کو کروڑوں روپے کا ٹیکہ ،نوٹس کون لے گا ؟شہریوں کا سوال ۔تفصیلا ت کے مطابق لاوہ میں سرکاری بلڈنگز کی دیکھ بھال نہ ہو نے کی وجہ سے زمین بوس ہونا شروع ہو گئی ہیں ۔تحصیلدار کی دفتر کی بلڈ نگ کی چار دیوار ی گر گئی اور عمارت بھی ڈگمگانے لگی ہے اور یو نین کونسل کی چار دیواری بھی گرنا شروع ہو گئی ہے ۔معلوم ہوا ہے کہ آ ر ایچ سی لاوہ میں جو رہائشیں تعمیر کی گئی تھی وہ بھی عدم توجہ کی وجہ سے وہاں گدھوں اور آ وارہ کتوں کی آ ماجگاہ بنی ہو ئی ہیں اور متعلقہ حکام نے آ نکھیں بند کر رکھی ہیں ۔مقامی افراد نے بتایا کہ ملک نور خان مرحوم نے ضلع کونسل سے چودہ لاکھ ریلیز کروا کر محکمہ کامن ایجوکیشن کی بلڈ نگ تعمیر کروائی گئی تھی لیکن ایک دن بھی سرکاری استعمال میں نہیں آ ئی جہاں آ ج جانوروں کا باڑ بناہوا ہے ، کھڑکیاں اور دروازے غائب ہو گئے ہیں اور چکی شیخ جی میں سرکار کے فنڈز سے ڈسپنری تعمیر کی گئی تھی عوام تو مستفید کم ہی ہو ئی لیکن بلڈنگ متعلقہ حکام کی بے حسی کی وجہ سے دن بدن گر رہی ہے اور پانی کیلئے نلکا لگوایا گیا تھا آ ج اسکا نام ونشان بھی نظر نہیں آ رہا ہے ۔علاقہ مکینوں کا مزید کہنا تھا کہ اسٹیڈ یم تعمیر کروایا گیا تھا وہ بھی آ ج جنگل کا سماں پیش کر رہا ہے اور پنجاب حکومت کی جانب سے جو 100سے کم تعداد والے سرکاری سکولز بند کروائے گئے تھے انکی بلڈنگز بھی غیر آ باد اور بھوسے کی ڈپو بن چکی ہیں ۔علاقہ مکینوں نے پنجاب حکومت سے اپیل کی ہے کہ لاوہ میں سرکاری بلڈنگز کی دیکھ بھال کی جا ئے تا کہ سرکاری خزانے کے نقصان کو بچایا جا سکے اور خالی سرکاری بلڈنگز میں مختلف محکموں کے دفاتر منتقل کیے جائیں تا کہ انکی دیکھ بھال ممکن ہو سکے ۔