عام انتخابات میں سر دار غلام عباس کا کردار نمایاں ہو گا ۔۔۔تحریر : شفاعت ملک

عام انتخابات میں سر دار غلام عباس کا کردار نمایاں ہو گا ۔۔۔تحریر : شفاعت ملک

عام انتخابات کی آمدآمدہے۔ سیاسی سرگرمیاں بھی زور پکڑ رہی ہیں۔ اور تمام بڑی جماعتیں اپنی جیت کے دعوے بھی کر رہی ہیں جو کہ قابل فہم ہے۔مگر میں یہ چاہوں گاکہ اس دفعہ جیت تلہ گنگ کی ہو۔ جس کی ایک صورت تو یہ ہے کہ تلہ گنگ کے صوبائی حلقے سے تلہ گنگ کا ہی امیدوار کامیابی حاصل کرے۔مگر سوال یہ ہے کہ کون ہے وہ ایسا جس کے آنے سے ہمارے اندر بھی اعتماد آئے۔ ملک طارق اقبال صاحب (مرحوم) اور سید تقلید شاہ ہمدانی صاحب کے بعد کوئی مقامی امیداور سامنے نہ آسکا۔ اس دفعہ کوشش یہ ہونی چاہیئے کہ کوئی مقامی امیداور سامنے آئے جو شاید کسی حد تک ہماری محرومیوں کا ازالہ کر سکے۔ تلہ گنگ اس صوبائی حلقے میں ایک بہت بڑا ووٹ بنک رکھتا ہے۔ اور اگر تلہ گنگ یہ فیصلہ کر لے کہ اس دفعہ ہمارا امیدار ہی ہو گا تو تمام بڑی سیاسی جماعتیں ٹکٹ دیتے وقت اس بات کی اہمیت کو ضرور سامنے رکھیں گی۔ اب وقت ہے جب تلہ گنگ کے رہائشی اس مطالبے کو پرزور انداز میں پیش کریں۔ میری یہ تحریر اسی سمت میں کوششوں کی ایک کڑی ہے۔ میرا یہ کہنا کہ امیداوار مقامی ہو اس کا قطعا یہ مطلب نہیں ہے کہ باقی علاقوں کو اپنا نہیں سمجھتا ۔ مگر یہ ایک اصولی اور جائز موقف ہے۔ آبادی کے لحاظ سے تلہ گنگ پورے حلقے کا سب سے بڑا علاقہ ہے اور اس حساب سے نمائندگی کا حق بھی بنتا ہے۔ ملک طارق اقبال صاحب (مرحوم ) اور سید تقلید شاہ صاحب کی صورت میں جو تجربہ ہوا ہے وہ کوئی برا نہیں رہا۔ دونوں کی ہی اچھی ساکھ ہے۔ ان سب باتوں کے ساتھ ساتھ ہم نے یہ بھی ثابت کرنا ہے کہ ہمار ا شہر قیادت کی صلاحیت رکھتا ہے۔ اب دیکھنا یہ ہو گا کہ سیاسی جماعتیں کن شخصیات کو سامنے لاتی ہیں۔ مگر ہمیں فیصلہ کرتے وقت میرٹ کا خیال ضرور رکھنا پڑے گا۔ سردار غلام عباس صاحب کے ن لیگ میں آنے کے بعد تو اس وقت پورے ضلع میں ن لیگ کے جیتنے کے آثار نظر آتے ہیں۔مگر تیزی سے بدلتی ہوئی ملکی سیاسی صورتحا ل کی وجہ سے کچھ بھی ہو سکتا ہے۔ اب وقت آچکا ہے کہ جب ہم نے برادریوں اور دھڑوں سے نکل کر اچھے امیدواروں کو چننا ہوگا۔ اس میں ہی ہماری ترقی اور مسائل کے حل کا راز پنہاں ہے۔ اگر ہم نے اچھے فیصلے کرنے شروع کردیئے تو آئندہ سیاسی جماعتیں بھی ٹکٹوں کی تقسیم کرتے وقت اس معیار کو بھی سامنے رکھیں گی اور اس طرح ہی تبدیلی آئے گی۔ اﷲتعالی ہم سب کے لئے آسانیاں پیدا کریں ا ور ہم سب کے حامی و ناصر ہوں۔ آمین