لاوہ ایم سی میں من پسند افراد کو نوازا جانے لگا ،منتخب نمائندے حقدار کو حق پہنچانے میں کردار ادا کریں۔عوام کی اپیل

لاوہ ایم سی میں من پسند افراد کو نوازا جانے لگا ،منتخب نمائندے حقدار کو حق پہنچانے میں کردار ادا کریں۔عوام کی اپیل

تلہ گنگ (خصوصی رپورٹ ) تحصیل لاوہ مسائلستان بن گئی ،اسسٹنٹ کمشنر کی سیٹ خالی دفتری معاملات ٹھپ ،رکن قومی اسمبلی اور رکن پنجاب اسمبلی کی جانب سے فنڈز کی بھرمار ،میونسپل کمیٹی ممبران اور مقامی کرتے دھرتے من پسند افراد کو نوازنے لگے ،توجہ کون دے گا ،علاقہ مکینوں کا سوال ۔لاوہ کو تحصیل کا درجہ ملے کئی سال بیت چکے ہیں اور لاوہ کمپلیکس تاحال زیر تعمیر ہے ،رکن قومی اسمبلی سر دار ممتاز ٹمن اور رکن پنجاب اسمبلی شہریار اعوان نے لاوہ کی پسماندگی کے خاتمے کیلئے فنڈز کی فراہمی میں کوئی کسر نہیں چھوڑی ،روڈز ،گلیاں ونالیاں ،بجلی ،سکولز ودیگر منصوبوں کی مد میں کروڑوں روپے کے فنڈز دئیے ۔فنڈز کی لاوہ میں آ مد ہوتے ہی میونسپل کمیٹی لاوہ کے ممبران اور مقامی کھڑپیچوں نے اپنی اپنی لمبی لسٹیں تیار کر کے فنڈزمن پسند افراد کے نام کر دئیے ۔معلوم ہوا ہے کہ میونسپل کمیٹی لاوہ کے ایک ممبر نے تو اپنے ہی صا حبزادے کو ٹھیکیدار بنایا ہوا ہے جسکی خوب آ ﺅ بھگت کی جا تی ہے اور موصوف ممبر اقتدار کے خوب مزے لے رہا ہے۔ لاوہ میں اسسٹنٹ کمشنر کی سیٹ خالی پڑی ہے تاحال تعیناتی نہیں ہو سکی جسکی وجہ سے سائلین کو ڈومیسائل سمیت دیگر دفتری کاموں میں شدید مشکلات کا سامناکر نا پڑ رہا ہے ،تحصیلدار اور رجسٹری محررکی مستقل تعیناتی نہ ہو نےکی وجہ سے تحصیل لاوہ کے مکینوں کو زمینوں کے کاموں میں تلہ گنگ کا رخ کرنا پڑتا ہے جسکی وجہ سے اذیت کا سامنا ہوتا ہے ۔میونسپل کمیٹی لاوہ کے ممبران کی آ پس میں ذاتی رنجشوں کی وجہ سے لاوہ کی پسماندگی ختم ہونے کا نام نہیں لیتی اور لاوہ ایم سی میں وہی گلیاں تعمیر کروائی جا رہی ہیں جو پہلے کچھ عرصہ قبل بنوائی گئی تھیں اور جو گلیاں تاحال تعمیر ہی نہیں ہو سکی انکی طرف کوئی توجہ نہیں دی جارہی ہے ۔علاقہ مکینوں نے رکن قومی اسمبلی اور رکن پنجاب اسمبلی سے اپیل کی ہے کہ لاوہ میں استعمال کیے جانے والے ترقیاتی فنڈز پر خود توجہ دیں اور جو اصل حقدار ہیں انہی کو اپنا حق پہنچانے میں اپنا کردار اداکریں ۔