تھا نہ سٹی کے اتھرے افسران چھ ماہ میں بھی مغوی کو بازیاب نہ کروا سکے ،ٹال مٹول اور مال کماﺅ پالیسی اپنا ئی ،مدعی بول تلہ گنگ کے آ فس پہنچ گیا ۔

تھا نہ سٹی کے اتھرے افسران چھ ماہ میں بھی مغوی کو بازیاب نہ کروا سکے ،ٹال مٹول اور مال کماﺅ پالیسی اپنا ئی ،مدعی بول تلہ گنگ کے آ فس پہنچ گیا ۔

تلہ گنگ (نما ئندہ بول تلہ گنگ) چھ ماہ قبل اغواءہو نے والی خاتون تاحال تھا نہ سٹی پولیس کے اتھرے افسران بازیاب نہ کروا سکے ،مال لگواﺅ پالیسی پر گامزن تفتیشی افسر بھی ٹال مٹول سے کام لینے لگا ،مدعی انصاف کیلئے میڈیا کے پاس پہنچ گیا ،آ ر پی او راولپنڈی اور ڈی پی او چکوال سے انصاف کی اپیل ۔ مدعی محمد عدیل احمد نے بتایا ہے کہ میری بیوی کو چھ ماہ قبل اغواءکیا گیا تھا جس کا مقدمہ تھا نہ سٹی میں درج کروایا تھا لیکن پولیس نے مغوی کی بازیابی کیلئے کام کم کیا اور مجھ سے مال زیادہ بٹورا ، تاحال مغوی کی بازیابی نہیں ہو سکی ۔عدیل احمد نے انکشاف کیا ہے کہ ذاتی خرچ پر ایک دفعہ مغوی کی بازیابی کیلئے پولیس افسران کو کراچی بھی لےکر گیا لیکن وہاں مجھے پولیس والوں نے نامعلوم مقام پر کھڑا کر دیا اور کوئی رزلٹ نہیں نکلا۔مدعی کا مزید کہنا تھا کہ تفتیشی افسر کے پاس جب بھی جاتا ہو ں تو یہی جواب موصول ہو تا ہے کہ کر رہے ہیں اورنئی ڈیوٹی لگا کر واپس کر دیا جاتا ہے ۔میر ے پاس جو بھی جمع پو نجی تھی وہ لگا دی ہے اور میری بیوی کی بازیابی تاحال نہیں ہو سکی ۔عدیل احمد نے آ ر پی او راولپنڈی اور ڈی پی او چکوال سے اپیل کی ہے کہ میری بیوی کو باز یاب کروایا جا ئے اور روزانہ تھا نے کے چکروں سے نجات دلوائی جا ئے۔