تلہ گنگ چکوال میں الگ الگ قانون چلنے لگا ،تلہ گنگ مرغی کا گوشت 180جبکہ چکوال میں 120روپے فروخت ہو رہا ہے۔

تلہ گنگ چکوال میں الگ الگ قانون چلنے لگا ،تلہ گنگ مرغی کا گوشت 180جبکہ چکوال میں 120روپے فروخت ہو رہا ہے۔

تلہ گنگ (پیر منظور حسین سے) تلہ گنگ مرغی کا گوشت 180سے200روپے کلو ،بلکسر چکوال 120سے140روپے کلو ۔تفصیلات کے مطابق مرغی کی وافر پیداوار کی وجہ سے چکوال بلکسر میں عوام کو مرغی فروش سہولت فراہم کررہے ہیں اور مرغی کا گوشت 120سے140تک عید کے پہلے سے فروخت کررہے ہیں کیونکہ وہ بتا تے ہیں بہت ذیادہ مرغی پک کر تیار ہو گئی ہے اسلئے عوام کے سامنے ذبح کرکے دے رہے ہیں تاکہ کوئی شکایت بھی نہ ہو اور سستا120روپے کلو گوشت فروخت کررہے ہیں جبکہ تلہ گنگ میں انتظامیہ کو کمپلین کرنے کے باوجود ریٹ کم نہیں کئے جارہے اورتلہ گنگ کے چند بڑے مرغی فروش من مانے ریٹ انتظامی امور میں مداخلت کرکے ریٹ لسٹوں پر لگوا رہے ہیں اور الٹا شکا یت کرنے والے کا بھتہ لینے والے انتظامی افسران ان کو بتا دیتے ہیں اور فی من 2سے ڈھائی ہزار روپے ناجائز منافع فوری میں مرغ فروشوں کے ساتھ حصہ دار بنے ہوئے ہیں اگر 2ہزارروپے من روزانہ ایکسٹرا منافع غریب عوام کی جیب سے نکالا جائے تو پورے تحصیل تلہ گنگ میں فروخت ہونے والی مرغی کا کتنا ناجائز منافع وصول کررہے ہیں جبکہ انتظامیہ کوئی مستقل ریٹ لسٹوں پر ریٹ کنٹرول کرنے کا انتظام نہیں کررہی اور غریب عوام کی جیبیں کٹ رہے ہیں اسی طرح ٹرانسپورٹ رکشے والے بھی من مانے کرائے وصول کورہے ہیں اور من پسند روٹ پر چل رہے ہیں ۔ضلع چکوال کے کئی علاقوں میں ڈھائی کلو میٹر پکا ڈیڑھ کلو میٹر کچا 4 سے5کلو میٹرکا کرایہ ڈیڑھ سو سے دو سو روپے وصول کرنے کے چکر میں رہتے ہیں جبکہ ان کے رکشے کی قیمت20ہزار روپے تک ہوتی اور کرایہ XLIکا40روپے فی کلومیٹر وصول کرنے کے چکر میں رہتے ہیں ،رکشوں کی فٹنس چیک کی جائے اور انکے فی کلو میٹر پکے اور کچے روڈوں کے کرائے مقرر کرکے عوام طلباء و طالبات ،ہسپتالوں اور سکولوں کو جانے والے عملے کو ان کی لوٹ مار سے بچائیں اور رکشے سوزوکیوں کا فی کلومیٹر کے حساب سے اور فی سواری کے حساب سے سرکاری کرائے مقرر کئے جائیں ۔