ضلع کا نوٹیفکیشن نہ ہو نا منتخب نما ئندوں کی ناقص پالیسیوں کا نتیجہ ہے ،عوامی رائے کی قدر کر تا ہوں ،حلقہ این اے اکسٹھ کے امیدوار فلک شیر اعوان کا بول تلہ گنگ کو تفصیلی انٹرویو۔

ضلع کا نوٹیفکیشن نہ ہو نا منتخب نما ئندوں کی ناقص پالیسیوں کا نتیجہ ہے ،عوامی رائے کی قدر کر تا ہوں ،حلقہ این اے اکسٹھ کے امیدوار فلک شیر اعوان کا بول تلہ گنگ کو تفصیلی انٹرویو۔

تلہ گنگ (خصو صی انٹرویو ) ضلع تلہ گنگ کے نوٹیفکیشن کی تگو ودو جاری رہے گی ،حلقہ این اے اکسٹھ کی عوام کی محرومیوں کے خاتمے کیلئے تگ ودو جاری رکھے ہو ئے ہوں ،دوستوں اور عوام کی خواہش پر حلقہ این اے اکسٹھ میں آ ئندہ قومی انتخابات میں حصہ لو ں گا ،قیادت جو حکم دے گی اس سے ایک قدم پیچھے نہیں ہٹوں گا ،منتخب نما ئندے ایک دوسرے کو نیچا دکھانے کی بجائے عوامی مسائل پر توجہ دیں ۔ان خیالا ت کا اظہار حلقہ این اے اکسٹھ کے متوقع امیدوار ملک فلک شیر اعوان نے ”آ زادی“ کو خصو صی انٹرویو دیتے ہو ئے کیا ۔انہو ں نے مزید کہا کہ مسلم لیگ ن کی اعلی قیادت سے ہم نے الر حمن فارم ہا ﺅس بلال آ باد میں 6دسمبر 2015کے ظہرانے میں مطالبہ کیا تھا کہ ضلعی چیئر مینی تلہ گنگ کا حق ہے اور ہمیں دیا جا ئے اور قیادت نے ہمارا مطالبہ مانتے ہو ئے ضلعی چیئر مینی کا ٹکٹ ملک طارق اسلم ڈھلی کو دے دیا جس پر ہم وزیر اعظم میاں محمد نواز شر یف ،خادم اعلی پنجاب میاں شہبازشر یف ،وفاقی وزیر داخلہ چوہدری نثار علیخان اور لیگی رہنما میاں حمزہ شہباز شر یف مشکور ہیں ۔ ہم ضلعی قیادت کے بھی مشکور ہیں جنہو ں نے تلہ گنگ کے امیدوار کی بھرپور سپورٹ کی اور انشا اللہ ہم اپنے کیے وعدے ضرور پورے کریں گے ۔ ضلعی چیئر مینی کے الیکشن میں ہمارے ہی ووٹوں سے کامیاب ہونے والے منتخب نما ئندے ہی ہمیں شکست دینے کیلئے ایڑھی چوٹی کا زور لگاتے رہے لیکن چکوال ،کلر کہار اور چو آ سیدن شاہ کے پا رلیمنٹرین نے ہماری کامیابی میں بڑھ چڑھ کر حصہ لیا ۔ ملک فلک شیر اعوان نے ایک سوال کے جواب میں کہا کہ ضلع تلہ گنگ کا نو ٹیفکیشن جاری کروانا منتخب نما ئندوں کی ذمہ داری ہے اور انہو ں نے میاں محمد نواز شر یف کو پانچ مئی والا وعدہ یاد دلانا ہے ،حالا نکہ ہم غیر منتخب ہو کر بھی ضلع تلہ گنگ کے نوٹیفکیشن کیلئے تگو ودو جاری رکھے ہو ئے ہیں ۔فلک شیر اعوان کا مزید کہنا تھا کہ منتخب نما ئندوں نے تو ضلعی چیئر مینی کی بھی ڈٹ کر مخالفت کی اور تاحال ضلع کی پیش رفت کیلئے کو ئی مثبت اقدام نہیں اٹھا یا جا رہا ہے ۔حلقہ این اے اکسٹھ کے متوقع امیدوار کا مزید کہنا تھا کہ جب سے سیاست کے میدان میں قدم رکھا اسو قت سے حلقے کے عوام کے مسائل کو فوکس رکھے ہو ئے ہوں اور جو مجھ سے ہو سکتا ہے میں وہ میں ہر صورت پایہ تکمیل تک پہنچا کر ہی دم لیتا ہوں ،ہمارے ہی منتخب نمائندے حلقے کی محرومیوں کے خا تمے پر توجہ دیتے تو مسائل نہ ہو نے کے برابر ہو تے لیکن انہو ں نے اپنی ہی جماعت کو کمزور کرنے کیلئے ایک دوسرے کو نیچا دیکھانے کے مشن پر گامزن ہیںجو کہ افسوس ناک ہے ۔مختلف علاقوں میں جانے کا اتفاق ہوا جس میں اجتماع میں لوگوں نے بے حد محبت دی اور پیار بھری آ نکھیں دیکھنے کو ملیں۔ملک فلک شیر اعوان کا مزید کہنا تھا کہ وزیر اعظم میاں محمد نواز شر یف کے دورہ پر تنقید کی جارہی ہے کہ انہو ں نے تین دورے کیے اور ضلع چکوال کو کچھ نہیں دیا میں واضح کرتا چلوں کہ جلد ہی میاں محمد نواز شر یف ضلع چکوال کا باضابطہ دور ہ کریں گے جس میں ترقیاتی پیکچز کے اعلانات کیے جا ئیں گے اور اس سے پہلے انکے دورے سیاسی نہیںسرکاری نوعیت کے تھے ۔کٹاس راج تقریب میں حاجی سر دار غلا م عباس کی دعوت کے حوالے منفی بیان بازی کی جا رہی ہے جو کہ حقائق کے با لکل بر عکس ہے ،سابق ضلع ناظم کو وزیر اعظم کی تقریب میں باضابطہ دعوت تھی وہ ذاتی مصروفیات کی وجہ سے شریک نہ ہو سکے ۔ این اے اکسٹھ کے متوقع امیدوار فلک شیر اعوان کا مزید کہنا تھا کہ دوستوں اور عوامی رائے کی دل سے قدر کر تا ہوں اور انشا اللہ کبھی مایوس نہیں کروں گا جو ہم باہر سے ہیں وہی ہم اندر سے ہیں،ہم نے نہ کبھی منافقت کی سیاست کی ہے اور نہ ہی اسکو تسلیم کرتے ہیں ۔ انشا اللہ ضلع کے نوٹیفکیشن کیلئے ہر دروازے پر دستک دوں گا ۔

falak sher awan

Leave a Reply

Your email address will not be published.