گز شتہ سال تلہ گنگ لاوہ کیلئے بھاری رہا ،بیس قتل ،بیس خودکشیاں،95افراد حادثات کی نظر اور چار نوجوانوں نے جام شہادت نوش فر ما ئی ۔

گز شتہ سال تلہ گنگ لاوہ کیلئے بھاری رہا ،بیس قتل ،بیس خودکشیاں،95افراد حادثات کی نظر اور چار نوجوانوں نے جام شہادت نوش فر ما ئی ۔

تلہ گنگ (نما ئندہ بول تلہ گنگ) گزشتہ سال تلہ گنگ ولاوہ میں بھاری رہا ،بیس افراد قتل ،چار نوجوان شہید ،بیس افراد نے خودکشیاں کیںاور 95افراد مختلف حادثات میں جان کی بازی ہار گئے ،جرائم کی شرح میں پہلے سے اضافہ ۔تفصیل کے مطابق 2016تحصیل تلہ گنگ اور لاوہ پر بھاری رہا اور اس سال میں ملنے والے ریکارڈ کے مطابق بیس قتل کی وارداتیں ہو ئیں اور ٹریفک ودیگر مختلف حادثات میں 95افراد اپنی جانیں گنوا بیٹھے۔2016میں خودکشیوں کی تعداد میںبھی ریکارڈ اضافہ ہوا، جن میں بیس کے لگ بھگ افراد نے خودکشیاں کیں اور خواتین اکثریت میںتھیں ۔معلوم ہوا ہے کہ خو دکشیاں زیادہ تر گھریلو تنازعوں یا دلی خواہشات پوری نہ ہو نے کی وجہ سے ہو ئی ہیں ۔مختلف ٹریفک حادثات اور واقعات میں پانچ سو کے لگ بھگ افراد زخمی ہو ئے اور کئی تو اپنے اعضاءسے بھی محروم ہو گئے ۔ڈکیتی اور چوری کی درجنوں وارداتیں ہو ئیں جن میں شہری جمع بونجھی سے محروم ہو گئے اور کئی وارداتوں میں تو شہری اپنی جان سے بھی ہاتھ دھو بیٹھے ۔ ہینڈ گرینڈ بھی برآ مد ہو ئے جن کو ناکارہ بنادیا گیا تھا ۔موٹرسائیکل کی چار درجن سے زائد وارداتیں ہو ئیں جن میں ہینڈا 125کی تعداد زیادہ ہے اور 2016میں تحصیل تلہ گنگ اور لاوہ کے چار نوجوانوں نے وطن کی خاطر اپنی جانیں دے کرجام شہادت نوش فرما ئی جن کو پورے فوجی اعزاز کے ساتھ سپرد خاک کیا گیا ۔عوامی وسما جی حلقوں نے کہا ہے کہ گزشتہ سال امن وامان کے حوالے سے کو ئی تسلی بخش نہیں رہا اور خودکشیوں کی بڑ ھتی ہو ئی تعداد بھی لمحہ فکریہ ہے ۔غربت سے تنگ آ کر اور بے روزگاری کی وجہ سے نوجوانوں نے زندگیوں کا خاتمہ کر دیا ہے جو حکومت کی نا اہلی کا منہ بولتا ثبوت ہے ۔

Leave a Reply

Your email address will not be published.